امریکہ تمام پریشانیوں کی وجہ ہے، کابل میں افغان پناہ گزین

0
امریکہ تمام پریشانیوں کی وجہ ہے، کابل میں افغان پناہ گزین_fororder_11

افغانستان میں طالبان ایک ماہ سے زائد  عرصہ سے قتدار میں ہے۔ کابل میں اب بھی افغانستان کے مختلف صوبوں سے آنے والے پناہ گزینوں کی ایک بڑی تعداد موجود ہے ، ان کی کیا صورتحال ہے؟ 23 تاریخ کو  چائنا  میڈیا گروپ کے ایک رپورٹر نے پناہ گزینوں کے اجتماع کے مقامات میں سے ایک کا دورہ کیا۔
کابل میں واقع نیو سٹی پارک ، جہاں افغانستان کے تہار ، قندوز ، بغلان اور دیگر صوبوں سے آئے ہوئے 1700 سے زائد خاندان جمع ہیں۔ پناہ گزینوں کے مطابق وہ پارک میں قائم عارضی خیموں میں سو سکتے ہیں اور انہیں ہر روز خوراک اور پانی کی کمی کا سامنا ہے۔

امریکہ تمام پریشانیوں کی وجہ ہے، کابل میں افغان پناہ گزین_fororder_222
امریکہ تمام پریشانیوں کی وجہ ہے، کابل میں افغان پناہ گزین_fororder_333

صوبہ تخار سے تعلق رکھنے والا ایک افغان مہاجر گلزمان جنگ سے بچنے کے لیے اپنے خاندان کے ساتھ کابل فرار ہو گیا۔ سی ایم جی کے رپورٹر کو انٹرویو دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ امریکہ ہماری تمام پریشانیوں کی وجہ ہے۔ گلزمان نے کہا کہ انہیں تمام مصیبتوں کا سامنا امریکیوں کی وجہ سے ہوا۔امریکیوں نے افغانستان میں نوجوانوں کو قتل کیا ، ان کے گھروں کو تباہ کیا اور انہیں بے گھر کیا۔ مستقبل کی بات کرتے ہوئے ، وہ امید کرتا ہے کہ نئی افغان حکومت امن اور استحکام لا سکتی ہے اور بچے سکول واپس آ سکتے ہیں۔
صوبہ قندوز سے تعلق رکھنے والے محمد نذیر پناہ گزینوں کے جمع ہونے کی جگہ کے عارضی رہنما ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت پناہ گزینوں کی زندگی بہت مشکل ہے ، ان کے پاس مناسب خوراک اور پانی کی کمی ہے اور رہنے کے لیے گھر نہیں ہیں۔ انہیں فوری طور پر نئی حکومت کی مدد کی ضرورت ہے۔ ان پناہ گزینوں کو گزر بسر کے لئے کابل میں روزگار دستیاب نہیں ہے۔اگرچہ وہ اپنے آبائی شہر واپس جانا چاہتے ہیں ، لیکن ان کے پاس پیسے نہیں ہیں۔

SHARE

LEAVE A REPLY