انسانی حقوق کونسل میں چین کے تصورات اور کامیابیوں سےمتعارف کروایا گیا

0

بائیس ستمبر کو اقوام متحدہ کے جنیوا دفتر میں چین کے نمائندے چھین شو نے اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے 48 ویں سیشن میں چین کے انسانی حقوق کے تصورات اور کامیابیوں پر روشنی ڈالی۔
چھین شو نے کہا کہ رواں سال کمیونسٹ پارٹی آف چائنا کے قیام کی سوویں سالگرہ منائی جارہی ہے۔ یہ انسانی حقوق کے لیے لڑنے ، انسانی حقوق کا احترام کرنے ، انسانی حقوق کے تحفظ اور انسانی حقوق کی ترقی کے 100 سال ہیں۔ کمیونسٹ پارٹی آف چائنا عوام کو اولین حیثیت دیتے ہوئے اس بات پر قائم رہی کہ عوام کے لیے خوشگوار زندگی ہی سب سے بڑا انسانی حق ہے۔ چین کامیابی کے ساتھ چینی خصوصیات کے حامل سوشلسٹ انسانی حقوق کی ترقی کی راہ پر گامزن ہے، چین نے جامع خوشحال معاشرے کی تعمیر مکمل کرلی اور غربت کے مسَلے کو حل کیا ہے۔ چین نے انسانی حقوق میں شاندار کامیابیاں حاصل کی ہیں۔
چھین شو نے کہا کہ چینی حکومت نے حال ہی میں قومی انسانی حقوق کا ایکشن پلان (2021-2025) جاری کیا ۔ اس بات کو یقینی بنانے کے لیے سخت محنت کی جارہی ہےکہ چینی باشندوں کے تمام انسانی حقوق کی اعلیٰ سطح پر ضمانت دی جائے۔اس کے ساتھ ساتھ، چین اپنی  انسانی حقوق کی بین الاقوامی ذمہ داریوں کو بھی احسن طریقے سے ادا کرے گا ، انسانی حقوق کے بین الاقوامی تعاون میں حصہ لے گا اور بین الاقوامی انسانی حقوق کی ترقی کے لیے اپنی خدمات سرانجام دے گا۔

SHARE

LEAVE A REPLY