چین کا ماحولیاتی تحفظ اور بحالی کا نظام تیزی سے مکمل کیا جا رہا ہے

0

چینی صدر شی جن پھنگ  نے اس بات پر زور دیا ہے کہ ہمیں اپنی آنکھوں کی طرح فطرت اور  ماحول کی حفاظت کرنی چاہئے ، اور انسان اور فطرت کے مابین ہم آہنگ بقائے باہمی کا ایک نیا نمونہ قائم کرنا چاہیے۔طویل عرصے سے  چین  ماحولیاتی تہذیب کے نظام میں اصلاحات کو فروغ دیتا چلا آ رہا ہے ، اور چین میں ماحولیاتی تحفظ اور بحالی کے لئے حمایت اور ضمانتی نظام کی تکمیل کی جار ہی ہے۔ آج چین میں قدرتی  ذخائر کی کل تعداد 11800 تک جا پہنچی ہے جس سے مؤثر طریقے سے 90 فیصد نباتات اور 85فیصد کلیدی حفاظتی  جنگلی جانوروں کی حفاظت کی جاسکتی ہے۔ آج کا چین دنیا  میں  سب سے زیادہ حیاتیاتی انواع کے حامل ملکوں میں سے ایک ہے۔چین ماحولیاتی تحفظ اور بحالی کی رفتار کو تیز تر کررہا ہے ۔

چین کا ماحولیاتی تحفظ اور بحالی کا نظام تیزی سے مکمل کیا جا رہا ہے_fororder_2

چین کی  قدرتی وسائل کی وزارت نے بتایا کہ اس وقت ، چین  کی ماحولیاتی تحفظ  کی ریڈ لائن ابتدائی طور پر مکمل کرلی گئی ہے۔حفاظتی ریڈ لائن جنگلات ، گھاس کے میدانوں ، جھیلوں ، گیلے علاقوں ، سمندروں اور دیگر علاقوں کا احاطہ کرتی ہے جو ماحولیاتی تحفظ کے لئے انتہائی اہم ہے ، جس میں حیاتیاتی تنوع کے تحفظ کے   35 ترجیحی علاقے  شامل ہیں۔ 

چین کا ماحولیاتی تحفظ اور بحالی کا نظام تیزی سے مکمل کیا جا رہا ہے_fororder_3
SHARE

LEAVE A REPLY