چینی نمائندے کی سری لنکا کے داخلی امور میں مداخلت کے خلاف انسانی حقوق کونسل میں تقریر

0

چھبیس تاریخ کو چینی وزارت خارجہ کی میڈیا بریفنگ میں یورپی یونین کےرکن ممالک کی جانب سے دورہ سنکیانگ سےمتعلق پوچھاگیا۔ چینی وزارتخارجہ کےترجمان وانگوینبین نےکہاکہ چین مختلف بیرونی وفود کےدورہ سنکیانگ کاخیرمقدمکرتاہے۔ حالیہ برسوں کےدوران ایک سوسےزائدممالک کےصحافیوں،سفارتی اہلکاروں سمیت دیگرحلقوں سےوابستہ بارہ سو شخصیات نےسنکیانگ کےدورےکیےہیں،انہوں نےسنکیانگ کی حقیقی صورتحال کو دیکھاہے جومغربی میڈیاکی کوریج سے یک سر مختلف ہے۔ 

ترجمان نے کہا کہ چین نے متعدد مرتبہ یورپی یونین کو دورہ سنکیانگ کی دعوت دی ہے اورانکی خواہشات کی روشنی میں اہتمام کی کوشش کی گئی ہے مگر افسوسناک امرہےکہ یورپییونین نےدورہ سنکیانگ کوکئی بارملتوی کیاہے، یورپییونین کی جانب سےغیرمعقول تقاضےکیےگئے ہیں یہاں تک کہ علیحدگی پسندی میں ملوث مجرمان سےملاقات کی تجویزپیش کی گئی ہے۔ ترجمان نےکہاکہ یورپی یونین نےاپنےدورےکو  مطالبات سے مشروط کیا ہوا ہے ،سنکیانگ کا دروازہ اُن کےلیےہمیشہ کھلاہے اور چین کی مخلصانہ دعوت آجبھی برقرارہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY