چین امید کرتا ہے کہ متعلقہ فریقین کووڈ-۱۹ وائرس کی ابتداکے معاملےپرمثبت ، سائنسی اور تعاون پر مبنی رویہ اپنائیں گے، چینی وزارت خارجہ

0

پانچ فروری  کو چینی وزارت خارجہ کے ترجمان  وانگ ون بین نے پریس کانفرنس میں اس امید کا اظہار کیا کہ مختلف فریقین کورونا وائرس کی ابتداکے بارے میں ایک مثبت ، سائنسی اور تعاون پر مبنی رویہ اپناتے ہوئے ڈبلیوایچ او کے ماہرین کو متعلقہ تحقیق کی دعوت دیں گے۔
اطلاعات  کے مطابق، عالمی ادارہ صحت کے ماہرین نے چین کے شہر وو ہان میں مختلف مقامات کا دورہ کیا۔ اس حوالے سے پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے وانگ ون بین نے کہا کہ وائرس کی ابتدا ایک سائنسی مسئلہ ہےاور یہ متعدد ممالک کے بہت سےعلاقوں سے متعلق ہے۔ عالمی سائنس دانوں کو  تعاون کے ذریعے  کام کرنا چاہیے۔ چین کا رویہ ہمیشہ آزاد اورشفاف رہا ہے اور  وائرس کی ابتدا کے معاملے پر چین نے عالمی ادارہ صحت کے ساتھ قریبی رابطے اور تعاون کو برقرار رکھا ہے۔ وانگ ون بین نےنشاندہی کی کہ  عالمی ماہرین کا دورہِ چین، دنیا بھر میں وائرس کی ابتدا سےمتعلق تحقیقات کا ایک حصہ ہے۔ ہمیں امید ہے کہ متعلقہ ممالک چین کی طرح،وائرس کی ابتدا پر تحقیق کے لیے عالمی ادارہ صحت کے ماہرین کو دعوت دیں گے اور عالمی طور پر انسداد وبا کے لیے اپنی اپنی خدمات سرانجام دیں گے

SHARE

LEAVE A REPLY