چند کرپٹ عناصرکو سزا نہ دینا1.3بلین لوگوں کو نقصان پہنچانے کے مترادف ہے ۔

0

” چند کرپٹ عناصر کو سزا نہ دینا 1.3 بلین لوگوں کو نقصان پہنچانے کے مترادف ہے ۔” چینی صدر مملکت شی جن پھنگ نے تیرہ جنوری دو ہزار پندرہ کو چینی کمیونسٹ پارٹی کے اٹھارہویں مرکزی انضباطی و معائنہ کمیشن کےپانچویں کل رکنی اجلاس سے اپنے خطاب میں یہ ہدایت جاری کی۔ صدر شی کی یہ ہدایت براہ راست انسداد بدعنوانی کی کلید ثابت ہوئی۔ انسداد بدعنوانی عوام کی حمایت میں لڑی جانے والی جنگ کے مترادف ہے ، اور”عوام کی حمایت ہی سب سے بڑی سیاست ہے۔”
بدعنوانی کے نقصانات سے ہر ایک بخوبی آگاہ ہے اور اس بات سے بھی انکار نہیں کیا جاسکتا ہے کہ انسداد
بدعنوانی یقینی طور پر چند لوگوں کے مفادات سے جڑی ہوتی ہے، لہذا کسی بھی ملک میں انسداد بدعنوانی کو بےشمار مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ اسی باعث انسداد بدعنوانی حکمراں جماعت اور حکومت کے لیے کسی چیلنج سے کم نہیں ہے۔ شی جن پھنگ کی سربراہی میں چین میں جاری بدعنوانی کے خلاف مہم نے پوری دنیا کی توجہ مبذول کروائی ہے اور اسے وسیع پیمانے پر سراہا بھی گیا ہے۔
2017 میں، چینی ٹی وی سیریز “لوگوں کے نام” نشر ہونے کے بعد ملک بھر میں گرما گرم مباحثے کا سبب بنی۔ اس سے لوگوں میں بدعنوانی سے نفرت اور انسداد بدعنوانی سے وابستہ توقعات کی عکاسی ہوتی ہے۔ عوام باشعور ہیں اور واضح طور پر یہ سمجھتے ہیں کہ فلاں عہدیدار ایماندار ہے یا کرپٹ۔ اس لیے چینی عوام بدعنوانی کے خلاف جنگ میں حکمراں جماعت اور حکومت کے پختہ عزم اور سخت اقدامات کی بھرپور حمایت کرتے ہے ۔
قدیم چینی فلاسفر مینشیوس کا قول ہے کہ : جو لوگوں کی حمایت پانے میں کامیاب رہتے ہیں وہ دنیا جیت جاتے ہیں۔ کسی بھی سیاسی جماعت یا سیاسی طاقت کے مستقبل اور مقدر کا دارومدار بالآخر عوامی حمایت پر ہے۔ بھرپورطریقے سے بدعنوانی کی حوصلہ شکنی اور ہر قسم کی بدعنوانی کا خاتمہ، یہی وہ قدریں ہیں جن کی بنیاد پر لوگوں کے دل جیتے جاسکتے ہیں۔

SHARE

LEAVE A REPLY