چین 2020 تک رکاوٹوں کے بغیر  نقل و حمل کا نظام بنانا چاہتا ہے: چینی وزارت ٹرانسپورٹ

0

 چین کی وزارت ٹرانسپورٹ کے مطابق چین 2020 تک رکاوٹوں کے بغیر نقل و حمل کا ایک خدماتی نظام  بنانا چاہتا ہے

 جمعرات کے روز چین کی وزارت ٹرانسپورٹ ، وزارت ہاوسنگ اور شہری و دیہی ترقی ، چین کی معذور افراد کی فیڈریشن اور چار دیگر ادراروں کی طرف سے معذور افراد  اور بزرگ شہریوں  کے لئیے نقل و حمل کی خدمات میں بہتری کے حوالے سے ہدایات جاری کی گئیں ۔

ان ہدایات کے مطابق  2020 تک،تمام نو تعمیر شدہ اور  دوبارہ تعمیر  شدہ  ریلوے سٹیشنوں، ایکسپریس ویز کے ساتھ سروس مراکز، ہوائی اڈوں  کے  ٹرمینلز اور دیگر نقل و حمل کی سہولیات میں  معذورافراد  اور بزرگ شہریوں   کے لئیے  بنا رکاوٹ کے سہولیات مہیا کی جائیں گی ۔  

   ہدایات میں کہا گیا کہ  پوسٹ آفسز   اس بات کو یقینی بنائیں  کہ بزرگ شہریوں  اور معذور افراد  کے لئے کسی بھی  ڈاک  کو انکے  مخصوص پتے تک پہنچایا جائے، جبکہ 5 ملین سے زائدآبادی والے شہروں میں نئی ​​بسیں  نچلے فرش کی ہونی چاہیں .

   اس کے علاوہ، مقامی حکومتوں کو ہدایت کی گئی کہ رکاوٹ فری انفراسٹرکچر کی تعمیر کے حوالے سے  زمین اور  مالیات کی شکل میں مدد فراہم کی جائے ۔  گائیڈ کتوں  کے  پبلک ٹرانسپورٹ میں سوار ہونے اور   نقل و حمل کی سہولتوں پر  بریل نشان بنانے کے حوالے سے پالیسیاں  وضح کرنے کے حوالے سے بھی ہدایات میں کہا گیا ہے ۔

SHARE

LEAVE A REPLY