چین کی کمیونسٹ پارٹی کے جنرل سیکرٹری شی جن پھنگ کا چینی کمیونسٹ پارٹی اور دنیا کی دیگر سیاسی جماعتوں کے درمیان مذاکرات کی افتتاحی تقریب سے خطاب

0

چین کی کمیونسٹ پارٹی کے جنرل سیکرٹری شی جن پھنگ نے جمعے کی سہ پہر بیجنگ میں چینی کمیونسٹ پارٹی اور دنیا کی دیگر سیاسی جماعتوں کے درمیان مذاکرات کی افتتاحی تقریب سے کلیدی خطاب کیا۔اس موقع پر جناب شی نے  سیاسی جماعتوں کے درمیان تعلقات  کے ایک نئے ماڈل کے قیام تجویز پیش کی جس میں سیاسی جماعتیں اختلافات کو دور کرتے ہوئے مشترکہ بنیادیں تلاش کریں اور ایک دوسرے کا احترام کرتے ہوئے ایک دوسرے سے سیکھیں۔انہوں نے مزید کہا کہ انسانیت کے لیے ایک ہم نصیب سماج کے قیام کا انیشیٹو ایک تصور سے اب عملی مرحلے میں داخل ہو چکا ہے ۔ جناب شی نے کہا کہ انہیں یہ دیکھ کر بے حد مسرت ہوئی ہے کہ چین اور دیگر ممالک کے درمیان دوستانہ تعاون فروغ پا رہا ہے اور  انسانیت کے لیے ایک ہم نصیب سماج کے قیام کے تصور کو  بڑے پیمانے پر عوامی حمایت مل رہی ہے۔ جناب شی نے کہا کہ دی بیلٹ اینڈ روڈ انیشیٹو  اس تصور کا عملی نمونہ ہے اور  مذکورہ انیشیٹو مختلف ممالک کی مشترکہ ترقی کے لیے تعاون کا ایک بڑا پلیٹ فارم بن چکا ہے۔جناب شی کا مزید کہنا تھا کہ چین کی کمیونسٹ پارٹی ترقی کے لیے کبھی بیرونی نمونوں کو اختیار نہیں کرئے گی اور نہ ہی دوسرے ممالک سے یہ کہے گی کہ وہ چینی ماڈل اور چینی اصولوں کو اپنائیں۔انہوں نے کہا کہ سی پی سی چینی عوام اور انسانیت کی ترقی کے لیے کوشاں ہے اور اسی باعث چین کی ترقی کو فروغ دیتے ہوئے دنیا کے لیے مزید مواقع پیدا کیے جائیں گے۔  انہوں نے مزید کہا کہ ایک کھلے وژن اور کھلے زہن کے ساتھ چین کی کمیونسٹ پارٹی  دنیا کی دیگر سیاسی جماعتوں اور عوام کے ساتھ  مذاکرات ، تبادلوں اور تعاون  کے لیے تیار ہے۔ آئںدہ پانچ برسوں میں  سی پی سی بیرونی سیاسی جماعتوں کے  پندرہ ہزار اراکین کو تبادلوں کے تحت چین کے دورے کی دعوت دے گی ۔انہوں نے کہا کہ سی پی سی اور دنیا کی دیگر سیاسی جماعتوں کے درمیان مذاکرات کو  ایک منظم نظام کا حصہ بناتے ہوئے اسے ایک اعلیٰ سطح کے سیاسی پلیٹ فارم کی صورت میں ترقی دی جائے۔ جناب شی نے مختلف ممالک کی سیاسی جماعتوں پر زور دیا کہ ایک ساتھ مل کر عالمی تعاون کا نیٹ ورک تشکیل دیا جائے اور مختلف سطحوں پر تبادلوں کو فروغ دیا جائے۔

SHARE

LEAVE A REPLY